Images

Bilawal Bhutto will remind people SZAB and SMBB, during his train march: Maula Bux Chandio #KarawaneBhutto

KARACHI: Pakistan Peo­ples Party (PPP) central information secretary Senator Maula Bux Chandio has urged the Pakistan Tehreek-i-Insaf (PTI) government to avoid the path of confrontation as it would stall the country’s progress as if Bilawal would come out on roads government would not bear its strength.

“Conduct of NAB (National Accountability Bureau) is not impartial at all … if it’s resorting to vindictive actions, then the consequences will be disastrous as things will not stop here,” he warned in a statement.

He reminded that just a trailer of PPP workers’ resistance has put the rulers in stun and they deployed hundreds of thousands police personnel on the appearance of former CM Sindh Qaim Ali Shah that showed government’s fear of Jiala’s protest.

“Bilawal Bhutto will remind the people of his mother, Benazir Bhutto and grandfather Zulfiqar Bhutto, during his train march,” he said adding that the Bhutto who had been caused the fear of selected government has come out and joined hands with the people.

Advertisements

تھر کا جلسہ ہو تو ایسا ہو

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زر داری نے 21 جولائی 2018 کے جلسے کی فوٹیج شیئر کرتے ہوئے کہاہے کہ تھر کا جلسہ ہو تو ایسا ہو۔ بلاول بھٹو نے ٹوئٹر پر وزیر اعظم عمران خان چیلنج کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے21 جولائی 2018 کے جلسے کی فوٹیج شیئر کردی۔بلاول بھٹو نے ننگرپارکر کے علاقے میں تاریخی جلسہ کیا تھا۔ایک حلقے میں سب سے زیادہ ووٹ تھر سے ڈالے گئے تھے۔انتخابات میں تھر سے پاکستان پیپلزپارٹی کو واضح کامیابی حاصل ہوئی۔

بلوچستان کا آئندہ وزیراعلیٰ جیالا ہوگا‘ بلاول بھٹو

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ بلوچستان میں جس کسی کی بھی حکومت ہو، وہ تختِ رائیونڈ کے بجائے عوام سے وفادار ہونی چاہیئے، آئندہ عام انتخابات میں عوام ایک جیالے کو بلوچستان کا وزیراعلیٰ منتخب کریں گے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی پی پی بلوچستان کے رہنماؤں سے بلاول ہاؤس کراچی میں ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ملاقات کرنے والے رہنماؤں میں پی پی پی بلوچستان کے صدر علی مدد جتک، جنرل سیکریٹری اقبال شاہ، اطلاعات سیکریٹری سربلند خان جوگیزئی، سینیٹ کے سابق ڈپٹی چیئرمین صابر بلوچ، اعجاز بلوچ، ربانی خلجی اور حفیظ الملک مینگل شامل تھے۔ پیپلز یوتھ آرگنائزیشن بلوچستان کے صدر ثناء اللہ جتک، عین الدین کاکڑ اور سفر خان زہری نے بھی بلاول بھٹو سے ملاقات کی۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ نواز لیگ نے بلوچستان کی عوام اور وہاں کی سیاست کو شدید نقصان پہنچایا ہے، شریف برادران ہر جگہ ناکام ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز لیگ نے بلوچستان اور وہاں کی عوام کو نظر انداز کرکے اُن کی احساسِ محرومی میں اضافہ کیا۔ چیئرمین پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ 2018ء کے عام انتخابات میں بلوچستان کی عوام ایک جیالے کو اپنا وزیراعلیٰ منتخب کرے گی، جو عوام کے تمام حقوق بحال کریگا اور لوگوں کی اُمنگوں کے مطابق ترقیاتی عمل کا آغاز کریگا۔