مسلم لیگ (ن) کے مزید لوگ پیپلز پارٹی میں شامل ہونگے: منظور وٹو

111079_34999099

لاہور (آئی این پی) پیپلزپارٹی پنجاب کے صدر منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ آنیوالے دنوں میں مسلم لیگ (ن) کے مزید لوگ پیپلز پارٹی میں شامل ہونگے۔ مسلم لیگ (ن) سندھ کی بجائے پنجاب کے فکر کرے اور آگے آگے دیکھئے ہوتا ہے کیا۔ پیپلز پارٹی نے مفاہمتی پالیسی سے لانگ مارچ سمیت ہر بحران کا خاتمہ کیا ہے ملک آئندہ انتخابات مکمل طور پر شفاف اور بروقت ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ آنیوالے دنوں میں مسلم لیگ (ن) کو پیپلز پارٹی مزید سراپرائز دیگی کیونکہ مسلم لیگ (ن) کے اور لوگ بھی پیپلز پارٹی میں شمولیت کےلئے رابطوں میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور ان کی پارٹی کو چاہئے کہ سندھ اور دوسرے صوبوں میں جانے کی بجائے پنجاب کی فکر کریں کیونکہ پنجاب مسلم لیگ (ن) کے ہاتھوں سے نکل چکا ہے اور آئندہ انتخابات میں پیپلز پارٹی پنجاب سمیت پورے ملک میں کامیابی حاصل کریگی۔

Advertisements

تمام مسائل کا حل صرف جمہوریت میں مضمر ہے اِس کے علاوہ کوئی بھی نظام ملکی بقاء کے لئے خطرہ ثابت ہوسکتاہے: میاں منظور وٹو

manzoor-watto_lpic-2410

اوکاڑہ۔۔۔۔۔ پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر ووفاقی وزیر امورکشمیر وشمالی علاقہ جات میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ لانگ مارچ ڈکلےئریشن پر دستخط کرکے حکومت نے سازشی عناصر کو ناکام بنایا ہے ،اسلام آباد دھرنے کا اختتام کسی کی ہار یا جیت نہیں بلکہ اِس سے جمہوریت مضبوط ہوئی ہے اور دنیا بھر میں پاکستان کا تشخص بہتر ہوا ہے ۔پاکستان میں تمام مسائل کا حل صرف اور صرف جمہوریت میں مضمر ہے اِس کے علاوہ کوئی بھی نظام ملکی بقاء کے لئے خطرہ ثابت ہوسکتاہے ۔

اِن خیالات کا اِظہاراُنہوں نے دیپالپور کے نواحی علاقوں منچریاں اور بستی دربار قلندر میں مختلف ترقیاتی کاموں کی افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔میاں منظو ر احمد وٹو نے کہا کہ موجودہ حکومت نے کئی اہم مراحل پر ملک کو قومی مفاہمت کی سیاست کے باعث کامیابی سے ہمکنار کیاہے جس کا تمام سہرا صدر مملکت آصف علی زرداری کے سر پر جاتاہے جنہوں نے تمام جماعتوں کی کڑی تنقید کے باوجود بھی نہایت صبروتحمل کے ساتھ مفاہمت کی پالیسی پر عملدرآمدجاری رکھا بلکہ اپنی مدبرانہ سوچ کا مظاہرہ کرتے ہوئے مخالفین کو بھی گلے لگایا۔

وہ صحیح معنوں میں بھٹوثانی ثابت ہوئے ہیں اور جولوگ اُن پر خوامخواہ تنقید کرتے ہیں وہ دراصل اِس ملک اور نظام کی مضبوطی کے دشمن بنے ہوئے ہیں ۔ اسلام آباد میں لانگ مار چ حکومت کے لئے سیاسی طورپرباعث تشویش نہیں بلکہ امن وامان کے حوالے سے لمحہ فکریہ ضرور تھا جس میں ہزاروں انسانوں کی جانوں کو خطرات لاحق تھے ، لہٰذا حکومت نے اپنی ذمہ داری کو احسن طریقہ سے محسوس کرتے ہوئے ایک اعلیٰ مذاکراتی وفد بات چیت کے لئے ڈاکٹر طاہرالقادری کے پاس بھیجا جنہوں نے وسعت القلبی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اُن کی بات کو سنااور اُس سے اتفاق کیا جس کے نتیجہ میں یہ مذاکرات کامیاب ہوئے اور ڈیڈلاک ٹوٹا۔

لانگ مارچ کی ہار یا جیت بڑا سوال نہیں بلکہ متفقہ ڈکلےئریشن وہ اَصل دستاویز ہے جس کے آنے سے سازشی عناصر کو منہ کی کھانی پڑی اور اُن کے تمام اندازے غلط ثابت ہوکر رہ گئے ۔ اِس ڈکلےئریشن سے جہاں جمہوریت کی جیت اور موجودہ نظام کی مضبوطی ہوئی ہے وہیں پر بیرونی دنیا میں پاکستانی عوام کا تشخص بھی بہترہوا ہے اور لوگوں نے پُراَمن رہ کرثابت کردیا ہے کہ پاکستانی قوم بڑی باشعور ہوچکی ہے وہ اپنے اچھے اور برے میں تمیز کرنا چاہتی ہے ۔ پاکستانی ایک پُراَمن قوم ہیں اور وہ دھشت گردی جیسی مذموم کاروائیوں کو ہرگز پسند نہیں کرتے ۔ یہ ایک مثبت سائن ہے جس کا نظارہ پوری دنیا نے اپنی کھلی آنکھوں سے دیکھا ہے ، موجودہ حکومت کے دَور میں جمہوریت جتنی مضبوط ہوئی ہے اُس کی مثال ماضی میں نہیں ملتی ۔

اِنشاء اللہ آنے والا اِنتخاب بالکل پاک شفاف ہوگا جس کی شفافیت پر بعد میں بھی کوئی اُنگلی نہیں اُٹھا سکے گا۔پیپلز پارٹی اپنی کارکردگی کی بنیاد پر آئیندہ ہونے والے اِنتخابات میں بھرپور کامیابی حاصل کریگی ۔ کارکن پوری دلجمعی کے ساتھ کام کریں اور عوام کے ساتھ اپنے روابط کو مزید بہتر بنائیں تاکہ عوام کی زیادہ سے زیادہ عملی خدمت کو یقینی بنایا جاسکے

لیپ ٹاپ کی غیر منصفانہ تقسیم، پنجاب یونیورسٹی کے طلبہ آج احتجاج کریں گے

331144-ShahbazSharif-1328211683-771-640x480

پنجاب یونیورسٹی کے طلبہ آج لیپ ٹاپ کی تقسیم کے حوالے سے احتجاج کریں گے ، پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ انجینئرنگ کے طلبہ کا کہنا ہے کہ لیپ ٹاپ کی تقسیم منصفانہ طور پر نہیں ہوئی ہے
جس کے باعث لیپ ٹاپ سے محروم طلبہ آج11بجے صبح انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کے باہر احتجاج کریں گے ۔ان کا کہنا ہے کہ میرٹ پر لیپ ٹاپ ہمارا حق ہے اور یہ حق ہم لیکر رہیں گے ۔

گورنر پنجاب کے 3 بیٹے پیپلز پارٹی میں شامل , بلاول کا ہر اول دستہ بنیں گے: گیلانی

makhdoom-480x238

گورنر پنجاب مخدوم احمد محمود کے تین صاحبزادے سید مصطفیٰ محمود ، سید مرتضیٰ محمود اور سید علی محمود پیپلزپارٹی میں شامل ہوگئے اس بات کا اعلان سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے اتوار کے روز رحیم یار خان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ شفاف اور منصفانہ الیکشن پیپلزپارٹی کے حق میں ہیں کسی کو انتخابات سے بھاگنے نہیں دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ گورنر پنجاب کے تین صاحبزادے ایم این اے سید مصطفیٰ محمود ، ایم پی اے سید مرتضیٰ محمود اور سید علی محمود گورنر پنجاب مخدوم احمد محمود کی اجازت سے پیپلزپارٹی میں شامل ہوئے ہیں ،مصطفیٰ محمود اور مرتضیٰ محمود بلاول بھٹو زرداری کا ہر اول دستہ بنیں گے ، یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ ملک میں انتخابات شفاف ہوں گے ،پیپلزپارٹی نے ہمیشہ جنوبی پنجاب کو اہم عہدے دیئے تاکہ خطے کے مسائل حل کئے جائیں الگ صوبہ بنائے بغیر جنوبی پنجاب کے مسائل حل نہیں ہوسکتے ۔نئے صوبوں سے متعلق کمیشن کی رپورٹ آئندہ قومی اسمبلی اجلاس میں پیش کی جائے گی دیکھتے ہیں کون مخالفت کرتا ہے ۔ جو لو گ نہیں چا ہتے جنو بی پنجا ب کے عوا م تر قی کریں وہ اس معا ملے میں رو ڑے اٹکا رہے ہیں۔سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا صدر کو کسی کی خواہش پر نہیں ہٹایا جاسکتا، کچھ جماعتوں نے مشرف ریفرنڈم میں ووٹ ڈالا انہیں بھاگنے نہیں دیں گے ۔گورنر محمود احمد نے کہاکہ وہ کوئی مراعات نہیں لیں گے آئندہ انتخابات شفاف اور منصفانہ ہوں گے پوری صلاحیت سے عوام کی خدمت کروں گا گورنر ہاؤس کے دروازے ہر وقت عوام کیلئے کھلے ہیں عوام کو بنیادی سہولایت کی فراہمی کی لئے کوششیں کریں گے ۔ لاہور ائیر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن میں ترمیم کے لئے صرف آئینی طریقہ کار کی حمایت کریں گے ، یہ تاثر درست نہیں کہ فوج اور آئی ایس آئی کی مداخلت کے باعث طاہر القادری کے خلاف آپریشن روکا گیا، جنوبی پنجاب صوبے کے حوالے سے جلد قانون سازی کی جائے گی۔

#PMLN leaders from Jhelum join #PPP

496459-RajaMuhammadAfzalKhanPhotoAPP-1358626621-904-640x480
Two members of the National Assembly belonging to the Pakistan Muslim League-Nawaz (PML-N) joined the ruling Pakistan Peoples Party (PPP) on Saturday.
Raja Muhammad Safdar and Raja Muhammad Asad – the two MNAs from Jhelum, who happen to be real brothers, met with President Asif Ali Zardari at Bilawal House in Karachi.

Later, they announced joining the PPP along with their father, Raja Muhammad Afzal, who is also a former MNA.
“I, along with my two sons, have joined the PPP,” Raja Afzal told a news conference at the PPP Media Cell. Federal Minister Khurshid Shah, MNA Faryal Talpur and Sindh Information Minister Sharjeel Inam Memon were present on the occasion.

To make Pakistan a true liberal, democratic and developed country.