Nawaz scrapped 25,000MW power plants deals signed by BB: Bilawal Bhutto Zardari

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے نوری آباد میں بجلی گھر کا افتتاح کردیا۔

//platform.twitter.com/widgets.js

بجلی گھر سندھ حکومت اور نجی کمپنی کی شراکت سے بنایا گیا ہے، جس سے 100 میگاواٹ بجلی ملے گی۔
نوری آباد پہنچنے پر وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بلاول بھٹو زرداری کا استقبال کیا۔
افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ ’وزیر اعظم نواز شریف کو غریب عوام کی کوئی فکر نہیں، اس پاور پلانٹ سے بجلی حیسکو کو دینی تھی لیکن ہم نے پاور پلانٹ خرید کربجلی کے الیکٹرک کو دینے کا فیصلہ کیا۔‘
انہوں نے کہا کہ ’آج بلاول بھٹو نے پاور پلانٹ کے ساتھ 99 کلو میٹر طویل ٹرانسمیشن لائن کا بھی افتتاح کیا۔‘
اس موقع پر بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ’سندھ حکومت نوری آباد سے کراچی کو بجلی فراہم کرنے کے لیے ٹرانسمیشن لائن بچھا رہی ہے، آج بےنظیر بھٹو کا خواب پورا ہوا ہے، جبکہ یقین ہے کہ تھر میں بھی بجلی کے منصوبے جلد شروع کیے جائیں گے۔‘
انہوں نے کہا کہ ’آج ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا دعویٰ کرنے والوں کی حکومت ہے، شہروں میں 14 گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے، دیہات میں بھی صورتحال خراب ہے، جبکہ بےنظیر کی حکومت میں شروع کیا جانے والا کیٹی کیٹی بندر پاور پلانٹ بھی بند ہے۔‘
بلاول بھٹو زرداری کا وزیر اعظم پر تنقید کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ’میاں صاحب اس عمر میں بھی غلط بیانی کرتے ہیں، میاں صاحب نے جو بویا وہ کاٹ رہے ہیں، پاناما میں کمپنی بنانے والےاصل چور ہیں جبکہ اگر وہ جے آئی ٹی سے بچ بھی گئے تو عوام نکال دیں گے۔‘
میاں صاحب نے لوڈشیڈنگ کے نام پرووٹ لئے مگرچارسال گزرگئے ،لوڈشیڈنگ ختم نہ کرسکے،آج ناصرف سندھ بلکہ ملکی تاریخ کااہم دن ہے کہ جب پاورپلانٹ کاافتتاح کیاگیاہے، بے نظیربھٹونے بجلی بنانے کے کئی بڑے بڑے پلانٹ لگائے تھے جنہیں میاں صاحب کی حکومت نے آتے ہی ختم کردیا،اگروہ منصوبے مکمل ہوجاتے توآج صورت حال مختلف ہوتی،انہوںنے کہاکہ سندھ پورے ملک کی گیس کا60فیصدپیداکرتاہے،سندھ وسائل سے مالامال صوبہ ہے.
ہم تھرمیں بھی بجلی کےمنصوبے شروع کریںگے،انہوںنے کہاکہ لوگوںنے دعوے کئے تھے کہ سندھ پاورکمپنی کوچلنےنہیں دیںگے،انہوں نے کہاکہ ہم سندھ میں ونڈانرجی پیداکرنے پرغورکررہے ہیں، میاں صاحب کی حکومت نے ہمیشہ ترقی کوسیاست کی نذرکردیا،سندھ کے شہروں میں 12سے 14گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جب کہ دیہاتوں میں صرف دوگھنٹے کیلئے بجلی آتی ہے،میاں صاحب آپ نےلوگوں کی زندگی عذاب بنادی ہے،صورت حال یہی رہی توعوام سڑکوں پرنکلے گی،اس دن میاں صاحب آپ کوچھپنے کی جگہ بھی نہیں ملے گی، جے آئی ٹی سے بچ بھی گئے توعوام نہیں چھوڑے گی،میاں صاحب آپ کے دن گنے جاچکے،آپ نے جوبویاتھاوہی آج کاٹ رہے ہو
کراچی: چئیرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی نے کبھی بھی قومی ترقی پر سیاست نہیں کی ہے مگر یہ میاں صاحب (وزیراعظم ) جنہوں نے اپنی سیاسی تنگ نظری کے تحت اس وقت کی وزیراعظم محترمہ بے نظیر بھٹو کے منظور کئے ہوئے اور دستخط کئے ہوئے 25000میگاواٹ کے پاور پروجیکٹس کو ختم کر دیا ۔انہوں نے یہ بات آج نوری آباد میں 100میگاواٹ کے گیس سے چلنے والے پاور پروجیکٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم بے نظیر بھٹو نے اپنے دور حکومت کے دوران 25000میگاواٹ کے پاور پروجیکٹس پر دستخط کئے تھے مگر افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ وزیراعظم نواز شریف نے ان تمام منصوبوں کو ختم کردیا اور ملک کو اندھیروں میں دھکیل دیا ۔
وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سندھ کے لوگوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ سندھ نے اپنا پہلا پاور پروجیکٹ ٹرانسمیشن لائن کے ساتھ شروع کیا ہے یہ ایک بہت بڑی کامیابی ہے اور میں یہ کہنا چاہونگا کہ یہ سندھ کے لوگوں کی کامیابی ہے۔ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ اصل میں یہ پاور پروجیکٹ اس وقت کے صدر آصف علی زرداری کی ہدایت پر شروع کیا گیا تھااور صوبہ سندھ میں بند گیس فیلڈ پر پلانٹس لگانے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی مگر وفاقی حکومت نے نہ صرف یہ کہ بند گیس فیلڈز حوالے کرنے سے انکار کر دیا بلکہ ایک مرحلے پر اس منصوبے کے لئے گیس فراہم کرنے سے بھی گریز کیاگیا جب یہ منصوبہ تکمیل کے نزدیک پہنچا تو حیسکو نے بجلی خریدنے سے انکار کر دیا اور یہ کہنے لگے کہ ان کے پاس انکے آپریشن کے علاقے کے لئے اضافی بجلی موجود ہے۔ یہ سب کچھ حیسکو کے لئے شرم کا باعث ہے ۔ وزیراعلیٰ سندھ نے حیسکو ، سیسکو کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنا کام اچھے طریقے سے کریں نہیں تو وہ اپنا کام بند کر دیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے پاور پلانٹس لگائیں گے ہمارے پاس اپنی ٹرانسمیشن اور ڈسپیچ کمپنی بھی ہے اور ہم اپنا ڈسٹری بیوشن سسٹم بھی قائم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے باالخصوص سندھ اور عموماً پاکستان سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لئے متعدد اقدامات کئے ۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہاہے کہ تھر کول فیلڈ بلاک II کی ترقی میں اہم سرمایہ کاری کے علاوہ، پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ (PPP) کے تحت نوری آباد میں 2×50میگاواٹ گیس فائرڈ پاور پلانٹ لگانے میں حکومت سندھ نے اہم پیش رفت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی منصوبوں کے لئے ایک معروف انجینئرنگ حصولی تعمیراتی کمپنی (EPC) کے ٹھیکے دار سے نجی شراکت دار ٹیکنومین کائی نیٹکس (پرائیویٹ) لمیٹڈ سے معاہدہ کیا جا رہاہے۔انہوں نے کہا کہ نوری آباد کراچی جیسے ساحلی شہر سے تقریبا 85 کلومیٹر دور ہے اور ایک اہم شاہراہ سے منسلک بھی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت 2 ارب روپے کی لاگت سے ڈسپیچ کمپنی لمیٹڈ کے ذریعے 95 کلومیٹر پر مشتمل خصوصی ٹرانسمیشن لائن کے لیے فنڈز فراہم کر رہی ہے۔ اس منصوبے کو کامیاب بنانے کے لیے دن رات کام کیا کیا اور ہر ممکن جدوجہد کی گئی۔ ان منصوبوں کا مقصد سندھ کے عوام کو بااختیار بنانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوری آباد پاور پلانٹس لگنے سے سب سے پہلے فائدہ کراچی کی عوام کو ہوگا۔ اس منصوبے کا مقصد ہی کراچی میں لوڈشیڈنگ کے خاتمہ، صنعتی ترقی میں بہتری لانا، روزگار مہیا کرنااور کراچی کے شہریوں کی خوشحالی ہے۔
وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ECC) کی طرف سے ایک فیصلے کے ذریعے 2×50 میگاواٹ توانائی کے منصوبوں کے لیے گیس مختص کی ہے۔ گیس کی مقدار پائپ لائن کے معیار کے 20 MMSCFD ہے اور100 میگاواٹ پیداوار کی صلاحیت رکھتی ہے۔وزیراعلیٰ سندھ نے ملکیتی ساخت کے حوالے سے بتایا کہ دو اسپیشل پرپوز کمپنیز (SPC) کے تحت منصوبہ قائم کیا گیا ہے، یعنی سندھ نوری آباد پاور کمپنی (پرائیویٹ) لمیٹڈ (SNPC) اورسندھ نوری آباد پاور کمپنی فیز II (پرائیویٹ) لمیٹڈ (SNPC دوم)۔ جس میں سندھ حکومت کو 49 فیصد اختیار جبکہ ٹیکنو کائی نیٹکس (پرائیویٹ ) لمیٹڈ کو 51 فیصد حاصل ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ مالیاتی ساخت کے حوالے نوری آباد پاور پلانٹ کے لیے 80 فیصد قرض اور 20 فیصد ایکوئٹی فراہم کیا جارہا ہے۔قرض د ینے میں نیشنل بینک آف پاکستان، سندھ بینک اور سندھ حکومت کے ملازمین پنشن فنڈ کی طرف سے فراہم کیا جارہا ہے۔ اس منصوبے کی کل لاگت 130 ملین امریکی ڈالر ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 2×50 میگاواٹ منصوبوں کے آغاز سے کراچی میں نمایاں طور پر لوڈ شیڈنگ کوکم کرنے میں مدد ملے گی اور کراچی کے شہریوں کو سستی بجلی فراہم ہوگی ۔ یہ بھی خوش آئند بات ہے کہ کراچی میں 225 میگاواٹ کے منصوبے کے قیام کے لئے کمپنی RLNG کے 40 ایم ایم سی ایف ڈی مزید مختص کریگی جس سے کراچی میں بجلی کے شارٹ فال کو کم کرنے میں مدد لے گی۔ قبل ازیں چئیرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے مین کنٹرول روم میں بٹن دبا کر پاور پلانٹ کا افتتاح کیا ۔ پاور کمپنی کے چئیرمین خورشید جمالی نے پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کو پاور پلانٹ سے متعلق بریفنگ دی ۔ اس موقع پر صوبائی وزراءنثار کھوڑو ، منظور وسان ، سید ناصر شاہ ، ارکین صوبائی اسیمبلی ، اراکین قومی اسیمبلی ، سینئر بیورکریٹس بھی موجود تھے۔
عبدالرشید چنا
میڈیا کنسلٹنٹ ، وزیراعلیٰ سندھ
Advertisements

Bilawal launches 2×50 MW Gas-Fired Power Plant at Nooriabad


KARACHI (May 31): Chairman PPP Bilawal Bhutto Zardari has said that PPP never play politics on national development but “it is Mian Sahab [PM] who scraped 25000 MW power projects signed and approved by prime minister Benazir Bhutto just for his political shortsightedness.”
This he said while addressing inauguration ceremony of 100-MW gas-fired power project at Nooriabad.
He said Prime minister Benazir Bhutto had signed 25000 MW prowler project during her tenure but sorry to say he [PM Nawaz Sharif] scrapped all the project and plunged the country into darkness,” he said and added the he (PM) would be ousted in JIT and if escaped from it then people would oust him.
PPP Chief congratulated Sindh Minister Syed Murad Ali Shah for installing 100 MW power plant despite serious hinderances created by federal government.
Bilawal Bhutto said that conspiracies were hatched when Sindh government created power, distribution & dispatch companies to fail them. “But with the grace of God both the companies, power and Transmission & Dispatch, have developed to be successful companies which has installed a power plant laid transmission line.
Sindh Chief Minister Syed Murad Ali Shah addressing on the occasion congratulated people of Sindh said that the Sindh has launched its first major power project along with its transmission line. ” This is big success and I would say it is the success of people of Sindh.
Syed Murad Ali Shah said that actually this power plant was conceived by then president Asif Ali Zardari and it was planned to install on the abandoned gas fields. “But, the federal government not only refused to hand over the abandoned gas fields but at one stage was reluctant to provide gas for this project.
When this project was near completion, the Hesco refused to purchase power absurdly saying that it had surplus power for the area of its operation. ” This was something to be ashamed of for Hesco,” he said.
The chief minister warned Hesco, Sesco to perform efficiently, otherwise pack up. “we would instal our power plants, we have out Transmission & Dispatch Company and we would establish our distribution system,” he announced.
He said The Sindh Government has taken several initiatives to eliminate load shedding in Sindh in particular and Pakistan in general. He added, Besides major investment in the development of Thar Coalfield Block II, The Sindh government has provided major support to develop 2×50 MW Gas Fired Power Plant at Nooriabad, on Public-Private-Partnership (PPP) basis. He went on saying the private sector partner being Technomen Kinetics (Pvt.) Limited, a well known EPC contractor for sizeable industrial projects.
It may be noted that Nooriabad is about 85 km from the port city of Karachi and is connected by a major highway.
The chief minister said that 95 Km special purpose transmission line has also funded by Sindh government through Sindh Transmission & Dispatch Company (STDC) Limited at a cost of Rs. 2 Billion. He added that the initiative is to eliminate load shedding in Karachi for improving the industries, employment and wellbeing of the citizens of the Karachi.
Syed Murad Ali Shah said the gas is being allocated for 2×50 MW power projects through a decision by the Economic Coordination Committee (ECC) of the Federal Cabinet. He added that the gas quantity is 20 MMSCFD of pipeline quality capable of producing 100 MW. “He added that 50 acres of land has already been acquired by the project companies.
Ownership Structure
Talking about ownership structure of the project, the chief minister said that the project has been established through two Special Purpose Companies (SPC) – viz. Sindh Nooriabad Power Company (Private) Limited (SNPC) and Sindh Nooriabad Power Company Phase II (Private) Limited (SNPC II). He added that Sindh government has assumed 49 percent of the equity and the Technomen Kinetics (Private) Limited has subscribed to 51 percent of the equity.
Financing Structure
Giving detail of financing structure, Syed Murad Ali Shah said that the project is funded through 80 percent debt and 20 percent equity. He added that the debt Is being provided by National Bank of Pakistan, Sindh Bank and Sindh Government Employees Pension Fund. The Project cost is estimated at USD 130 Million.
The chief minister said with the commissioning of 2×50 MW projects, Karachi will be able to reduce load shedding significantly and would provide cheap electricity to the citizens of Karachi.
The chief minister said that It is heartening to note that the company is further allocated with 40 MMCFD of RLNG to establish 225 MW project in Karachi to further reduce the shortfall.
Earlier, Chairman PPP inaugurated power plant by pressing a button in the main control room. The chairman power company Khursheed Jamali briefed the PPP chairman about the power plant.
On the occasion provincial ministers, Nisar Khuhro, Manzoor Wassan, Syed Nasir Shah, MPAs, MNAs, senior bureaucrats were also present.

Bilawal Bhutto strongly condemns suicide terrorist attack in Kabul’s diplomatic enclave

KARACHI, May 31: Chairman Pakistan Peoples Party Bilawal Bhutto Zardari has strongly condemned suicide terrorist attack in Kabul’s diplomatic enclave adding that terrorists are striking innocent people everywhere.

In a press statement, he said that human fraternity has to get united to eliminate terrorism from the earth while neighbours have also to fulfill their responsibilities with open heart for peace in the region.

Bilawal Bhutto Zardari expressed sympathy and solidarity with families of the Kabul blast victims and prayed for early recovery of those injured.

کراچی:بلاول بھٹو زرداری نے نوری آباد بجلی گھر کا افتتاح کردیا

کراچی چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹوزرداری نے نوری آبادپاورپلانٹ کاافتتاح کردیا،نجی چینل کے مطابق اس سے قبل بلاول بھٹوزرداری نوری آباد پہنچے تووزیراعلیٰ سندھ سید مرادعلی شاہ نے ان کااستقبال کیا،بلاول بھٹوزرداری نے وزیراعلیٰ سندھ کے ہمراہ پاورپلانٹ کے مختلف حصوںکامعائنہ کیا، افتتاح کے بعدنوری آبادپاورپلانٹ سے کراچی کو100میگاواٹ بجلی کی فراہمی شروع کردی گئی،یہ پاورپلانٹ 13ارب روپے کی لاگت سے تیارکیاگیاہے۔