بلاول بھٹو زرداری کی طرف سے خاتون رپورٹر پر تشدد اورگرفتاری کی شدید مذمت

چئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کی طرف سے خاتون رپورٹر پر تشدد اور ان کی گرفتاری کی شدید مذمت
– صحافیوں پر کسی قسم کے تشدد اور غیر قانونی کاروائی کو برداشت نہیں کرینگے: بلاول بھٹو زرداری
– گرفتار صحافی خاتون کو فوری رہا کیا جائے اور تشدد کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے: بلاول بھٹو زرداری
– یہ بھی معلوم کیا جائے کہ انہوں نے کس کے اشارے پر کاروائی کی:
– صحافی برادری کے ساتھ ہیں اور آزادی صحافت پر آنچ نہیں آنے دینگے: بلاول بھٹو زرداری

PPPP President Asif Ali Zardari condemns misbehave on journalists

اسلام آباد
سابق صدر پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمینٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے ٹی چینل 24 کی خاتون رپورٹر صبا بجیر سے وفاقی حکومت کے اہلکاروں کی بدتمیزی اور صحافی عرفان ملک پر تشدد کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ میڈیا پر قدغن لگانے کی بجائے حکومت اپنے اعمال درست کرے۔ سابق صدر نے کہا کہ خاتون صحافی سے بدتمیزی انتہائی گری ہوئی حرکت ہے اور صحافیوں کو اپنی پیشہ وارانہ ذمے داریوں سے روکنا اس سوال کو جنم دے رہا ہے کہ آخر میڈیا سے کیا چیز چھپائی جا رہی ہے؟ آصف علی زرداری نے کہا کہ اس طرح کی حرکتیں حکومت کی بوکھلاہٹ کو بے نقاب کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس عمل میں ملوث اہلکاروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔

نواز شریف اور انکی فیملی کرپشن میں ملوث ہیں انہیں مستعفی ہونا چاہیے: حاجی علی مدد جتک

کوئٹہ :پیپلز پارٹی بلوچستان کے صوبائی صدر حاجی علی مدد جتک نے کہاہے کہ عوام کی نظریں پاناما کیس کے حوالے سے عدالت عالیہ پر لگی ہے وزیراعظم نواز شریف اور انکی فیملی کرپشن کمیشن میں ملوث ہیں انہیں مستعفی ہونا چاہیے بصورت دیگر عوام اپنی طاقت سے انہیں اقتدار سے ہٹائیں گے انہوں نے یہ بات جمعہ کے روز صدیق ترین ،بادشاہ کاکڑ ،نصیب اچکزئی کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کے موقع پر کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی اس موقع پر پارٹی کے صوبائی سیکرٹری سید اقبال شاہ ،صوبائی سیکرٹری اطلاعات سردار بلند خان جوگیزئی اور پارٹی دیگر عہدیدار بھی موجود تھے انہوں نے کہاکہ نئے شامل ہونے والوں کو دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں اورا مید رکھتے ہیں کہ ان کی شمولیت سے پارٹی مزید مضبوط او مستحکم ہوگی حاجی علی مدد جتک نے کہاکہ ایک سازش کے تحت صوبے میں سیاست کے نام پر بلوچ پشتون ،قبائل میں نفرت کا بیج بویا جارہا ہے انہوں نے دعوے کیاکہ عام انتخابات جب بھی ہونگے مرکز سمیت چاروں صوبوں میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہوگی جب ان سے پوچھا گیا کہ این اے 260ضمنی الیکشن میں پیپلزپارٹی انتخاب کیوں نہیں جیت سکی تو انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ (ن) کے پاس کوئی امید وار نہیں تھا جمعیت علماء اسلام کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمن نے وزیراعظم کی حمایت کا فیصلہ کیاتھا جس کے سلسلے میں جمعیت علماء اسلام کے امیدوار کے ساتھ حکومت نے ہرممکن تعاون کیا جمعیت علماء اسلام کے ساتھ کئی سیاسی جماعتیں موجود تھی ہم اکیلے الیکشن لڑرہے تھے اس کے باوجود سرکاری طورپر جو نتائج کا اعلان کیا گیا تھا ہماری امیدوار نے 20ہزار سے زیادہ ووٹ لیے ہیں انشاء اللہ آنے والے انتخابات میں ہم اس حلقے سے بھاری تعداد میں کامیاب ہونگے انہون نے کہاکہ محکمہ مواصلات کے سینکڑوں ملازمین کو کئی عرصے سے تنخواہ نہیں دی جارہی ہے ہمار امطالبہ ہے کہ انکو فوری طورپر تنخواہ دی جائے انہوں نے مزید کہاکہ صوبائی حکومت سرکاری ملازمین کو تنخواہیں تو ادانہیں کرسکتی مگر ملک سے اربوں روپے بیرون ممالک منتقل کیے جارہے ہیں انکا کہناتھاکہ سول سیکرٹریٹ ملازمین جو اپنے جائز حقوق کیلئے سراپا احتجاج ہے مگر صوبائی حکومت کی نااہلی کی وجہ سے ملازمین کے صدر حمزہ محمد شہی سمیت کئی دیگر ملازمین کو گرفتارکرکے جیلوں میں ڈالاگیا ہے جس کی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں او رحکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سول سیکرٹریٹ ملازمین کے مطالبات فور ی طورپر منظور کریں اورگرفتار افراد کو چھوڑ دیا جائے پیپلز پارٹی ملازمین کے حقوق کیلئے انکے ساتھ ملکر صفحہ اول کا کردار ادا کریں ۔

To make Pakistan a true liberal, democratic and developed country.